Modesty in Islam


اسلام کا امتیازی وصف حیا

:زید بن طاحہؓ سےروایت ہے،وہ نقل کرتےہیں کہ رسول اللہؐ نےفرمایا
کہ ہر دین کا ا متیازی وصف ہوتا ہےاور دین اسلام کا امتیازی وصف حیا ہے۔
(موطا امام ما لک،سنن ابن ما ج وشعب الایمان لبہقی)

Modesty in Islam


حیا ایمان کی اک شاخ

:حضرت ابوہریرہؓ سےروایت ہے،کہ رسول اللہﷺ نے فرمایا
حیا ایمان کی ایک شاخ ہے یا ایمان کا ثمر ہے اور ایمان کا مقام جنت ہے،اور بے حیائی و بے شرمی بدکاری میں سے ہے اور بدی دوزخ میں لے جانی والی ہے۔
(مسند احمد،جامع ترمزی)

Modesty - The Branch of Faith


حیا اور ایمان یہ دنوں ہمیشہ ساتھ 

:حضرت عبدااللہ بن عمرؓ سےروایت ہے،کہ رسول اللہﷺ نے فرمایا
حیا اور ایمان یہ دنوں ہمیشہ ساتھ اور اکٹھے ہی رہتے ہیں، جب ان دونوں میں سے کوئ ایک اٹھا لیا جائے تو دوسرا بھی اٹھا لیا جاتا ہے۔
(شعب الایمان للبہقی)

Modesty and Faith


حیا صرف خیر

:حضرت عمران بن حصینؓ سے ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا
حیا صرف خیر ہی کو لاتی ہے۔
(صحیح بخاری و صحیح مسلم)

Modesty brings Blesslings


 جو چاہو کرو

:حضرت عبدااللہ بن مسعودؓ سے روایت ہے، کہ رسول اللہﷺ نے فرمایا
اگلی نبوت کی باتوں میں سے لوگوں نے جو کچھ پا یا ہے ا س میں ا یک مقولہ یہ بھی ہے کہ جب تم میں شرم و حیا نہ ہو ،تو پھر جو چاہو کرو۔
(صحیح بخاری)

Modesty - Prophet Sayings


اللہ سے حیا

:حضرت عبدااللہ بن مسعودؓ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا
اللہ سے ایسی حیا کرو جیسی اس سے حیا کرنی چاہٗے۔ مخاطبین نے عرض کیا، الحمدللہ! ہم اللہ سے حیا کرتے ہیں۔ آپؐ نے فرمایا ، یہ نہیں! بلکہ اللہ تعالیٰ سے حیا کرنے کا حق یہ ہے ک سر اور سر میں جو افکار و خیالات ہیں ان سب کی نگہداشت کرو اور پیٹ کی اور جو کچھ اس میں بھرا ہے اس سب کی نگرانی کرو (یعنی بٌرے خیالات سے دماغ کی اور حرام و ناجاٰئز غذاء سے پیٹ کی حفاظت کرو ) اور موت اور موت کے بعد قبر میں جو حالت ہونی ہے اس کو یاد کرو اور جو شخص آخرت کو اپنا مقصد بنائے، وہ دنیا کی آراش و عشرت سے دست بردار ہو جائے گا اور اس چند روزہ زندگی ک عیش کے مقابلے میں آگے آنے والی زندگی کی کامیابی کو اپنے لیئے پسند اور اختیار کرے گا، پس جس نے ی سب کچھ کیا، سمجھو ک اللہ سے حیا کرنے کا حق اس نے ادا کیا۔
(جامع ترمذی)

HAYA


حیا تو ایمان کا جز

حضرت عبد االلہ بن عمرؓ سےروایت ہے،کہ رسول اللہؐ کا گزر ،ا نصار میں سےایک شخص پر ہوا اور وہ اس وقت اپنے بھائی کو حیا کےبارے میں کچھ نصیحت و ملامت کر رہا تھا،تو آپؐ نےاس سےفرمایا
کہ اسکو اسکےحال پر چھوڑ دو کیونکہ حیا تو ایمان کا جز یا ا یمان کا پھل ہے۔
(صحیح بخاری ومسلم)

HAYA Hadees

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here